empty
 
 
مرکل نے جوابی ٹیرف کے متعلق  ٹرمپ کومتنبہ کیا

مرکل نے جوابی ٹیرف کے متعلق ٹرمپ کومتنبہ کیا

آخرکار ، تجارتی جنگیں اپنے معیار اور اہمیت میں فوجی تنازعوں سے کہیں زیادہ بھاری بھرکم لگ رہے ہیں . تجارتی تنازعات میں جو اچھی چیز ہےوہ یہ ہے کہ نقصانات زیادہ تر مالی ہیں. کسی خاص تجارتی کارروائی میں کوئی بھی نہیں گھسیٹا جاتا ہے یاذمہ دار سمجھا جاتا ہے. شاید کچھ ممالک، ایسے تجارتی عمل میں شامل ہونے کے خواہاں ہوں گے لیکن ان کے پاس اقتصادی اور مالی وسائل کی کمی ہے.جبکہ کچھ ممالک اس سے دور ہیں ، عالمی طاقتیں حتمی لڑائی کے لئے مظبوط ہو رہی ہیں .

ریاستہائے متحدہ کم سے کم دو مخالفین سے مقابلہ کرنے کی تیار ی کر رہا ہے: ریاستہائے متحدہ کم سے کم دو مخالفین چین اور یورپین یونین سے مقابلہ کرنے کی تیار ی کر رہا ہے: دونوں طرف سے پہلے سے ہی ایک دوسرے کے خلاف مختلف سامان پر ٹیرف لگے ہوئے ہیں اور مزید فیصلہ کن اقدامات کا ارادہ رکھتے ہیں. ٹرمپ کی دھمکی کے بعد کہ یورپین یونین سے درآمد آٹو پر بڑے ٹیرف متعارف کرائے جائیں گےجرمن چانسلر انجیلا مرکل نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹومپ کو خبردار کیا کہ ملک کسی بھی اقدام کے لئے تیار ہے۔ یورپین کاریں کافی سخت دھچکا ہیں: یہ سادہ ا سٹیل اور ایلومینیم کے بارے میں نہیں ہے، بلکہ اب یہ برانڈ کے بارے میں ہے امریکی برانڈز بھی اب خطرے میں ہیں: ایسے مشہور برانڈڈ مصنوعات جیسے بربن، جینس، اور ہارلے ڈیوڈسن موٹر سائیکل .اس کے علاوہ، مارچ میں یورپین کمیشن نے "ڈیجیٹل ٹیکس" کے لئے اپنی منصوبہ بندی شائع کی جس کا مقصد ایمیزون، فیس بک، اور گوگل جیسے بین الاقوامی کارپوریشنوںکے لئے آمدنی شیفٹ کی وجہ سے پورے یورپ میں تنقید کا نشانہ بنایا گیا.

Back

See aslo

ابھی فوری بات نہیں کرسکتے ؟
اپنا سوال پوچھیں بذریعہ چیٹ.