empty
 
 
ایف ای ڈی چیئرمین کو کرپٹو کی دنیا میں امریکی ڈالر کا کوئی حریف نظر نہیں آتا

ایف ای ڈی چیئرمین کو کرپٹو کی دنیا میں امریکی ڈالر کا کوئی حریف نظر نہیں آتا

امریکی فیڈرل ریزرو کے چیئرمین جیروم پاول نے فخریہ طور پر اعلان کیا ہے کہ بٹ کوائن اور دیگر کرپٹو کرنسیاں ادائیگی کا مشترکہ ذریعہ بننے میں "مکمل طور پر ناکام" ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ کرپٹو مارکیٹ اب امریکی ڈالر کے لیے کوئی خطرہ نہیں ہے۔

اُن کے مطابق کرپٹو کرنسیاں صرف گمنام لین دین کے لیے استعمال کی جاتی ہیں۔ پاؤل کو یقین ہے کہ ریزرو کرنسی کے طور پر امریکی ڈالر کی حیثیت کا کوئی حریف نہیں ہے۔ تاہم انہیں ڈیجیٹل اثاثوں کے نفاذالعمل ہونے پر تشویش ہے۔ ایف ای ڈی کے سربراہ نے معیشت کی حالت کے بارے میں کانگریس کو رپورٹ کرتے ہوئے کہا کہ میرے خیال میں اسے تیزی سے کرنے سے زیادہ ضروری درست انداز میں کرنا ہے۔

پاؤل نے امریکی ڈالر پر بھرپور اعتماد کا اظہار کیا ہے۔ ان کی رائے میں امریکی کرنسی اپنا غلبہ کھو نہیں سکے گی چاہے سی بی ڈی سی کو بہت سے دوسرے ممالک قبول کر لیں۔ انہوں نے "ناکام کرنسی" پر بات کرنے کے بجائے مستحکم کوائن مارکیٹ کو ریگولیٹ کرنے پر توجہ مرکوز کرنے کی تجویز دی۔ اس بات زوز دیتے ہوئے کہ مستحکم کوائن مارکیٹ "ادائیگیوں کی دُنیا کا ایک اہم حصہ" بن سکتی ہے، پاؤل نے ایک مضبوط ریگولیٹری فریم ورک کی واضح ضرورت پر دلائل دئیے۔ انہوں نے مزید کہا کہ انہیں بینک ڈپازٹس اور میوچل فنڈز کے ساتھ مساوی بنیادوں پر ریگولیٹ کیا جانا چاہئے۔

کرپٹو کرنسیوں اور ایکسچینجنوں پر ترقی یافتہ معیشتوں کے حکام کے کریک ڈاؤن کے باوجود بینکنگ شعبہ کے اعلیٰ حکام اب بھی اس بات کی تصدیق کرتے ہیں کہ کرپٹو کرنسیاں ابھی اتنی مضبوط نہیں ہوئی ہیں کہ مالی استحکام کے لیے مربوط خطرہ پیدا بن سکیں۔ شاید یہی وجہ ہے کہ ابھی تک دُنیا بھر میں ڈیجیٹل کرنسیوں کا کوئی سخت اور مربوط ضابطہ عمل نہیں ہے۔

Back

See aslo

ابھی فوری بات نہیں کرسکتے ؟
اپنا سوال پوچھیں بذریعہ چیٹ.